ایرو انڈیا ۔2017 ایک تعارفی خاکہ

ایرو انڈیا ۔2017 ایک تعارفی خاکہ

نئی دہلی،بین الاقوامی ایرو اسپیس اور دفاعی نمائش یعنی ایرو انڈیا 2017 کا گیارہواں دو سالہ ایڈیشن ایرفورس اسٹیشن، یالا ہانکا، بنگلورو میں 14 سے 18 فروری 2017 کے درمیان منعقد ہوگا۔ ایروانڈیا کا آغاز 1996 میں ہوا تھا اس نے ایرواسپیس اور پرواز سے متعلق نمائش کے طور پر بین الاقوامی منظرنامے میں اپنا ایک مقتدر مقام بنالیا ہے اور اب یہ نمائش ایشیائی خطے میں اپنے نوعیت کی سب سے مقبول عام نمائش بن گئی ہے اور اس نمائش میں پور ی دنیا کے ادارے حصہ لیتےہیں۔ اس نمائش کا اہتمام دفاعی نمائش آرگنائزیشن (ڈی ای او) کے زیر اہتمام کیا جاتا ہے اور وہ ہی سارا انتظام انصرام دیکھتی ہے۔ اس سال کی نمائش کی خاص باتیں درج ذیل ہیں: 

(i)    اس سال کی نمائش میں 270 بھارتی اور 279 غیر ملکی کمپنیاں حصہ لے رہی ہیں اس طرح سے مجموعی طور پر 549 کمپنیاں حصہ لے رہی ہیں۔ 

(ii)    شو کا مجموعی رقبہ 24403 مربع میٹر سے بڑھ کر اس سال 27678 مربع میٹر ہوگیا۔ 

(iii)    اس سال کی نمائش میں حصہ لینے والے طیاروں کی تعداد 72 ہے۔ 

(iv)    مجموعی رقبہ بھی 250000 مربع میٹر سے بڑھ کر 260000 مربع میٹر ہوگیا ہے۔ 

(v)    توقع کی جاتی ہے کہ دو کاروباری وزیٹر اس شو کو دیکھنے کے لئے آئیں گے۔ 

(vi)    ریاستی سرکاروں کی جانب سے مذاکرات کا بھی اہتمام کیا جائے گا(آندھرا گلوبل سی ای او اجتماع ایرو اسپیس اور دفاعی مینوفیکچرنگ مواقع کے سلسلے میں 14 فروری 2017 کو آندھرا پردیش میں 14:30 بجے سے شروع ہوگا جس کی صدارت شہری ہوابازی کے وزیر جناب اشوک گجپتی راجو پوسا پتی کریں گے)۔ 

مہمان ذی وقار کے طور پر وزیر دفاع جناب منوہر پاریکر شریک ہوں گے۔ اس مذاکرے میں سائنس و ٹکنولوجی کی وزارت اور ارضیاتی سائنسز کے وزیر مملکت جناب وائی ایس چودھری، ہنرمندی ترقیات اور صنعت کاری کے وزیر (آزادانہ چارج) جناب راجو پرتاپ روڈی بھی شریک ہوں گے۔ بری فوج کے عملے کے سربراہ جنرل وپن راوت ، فضائیہ کے سربراہ ایئر چیف مارشل بی ایس دھنووا، دفاعی سکریٹری جناب جی موہن کمار ، دفاعی پیداوار سکریٹری جناب اے کے گپتا اور آندھراپردیش کی حکومت کے مالی اور منصوبہ بندی تجارتی ٹیکسوں، قانونی امور کے وزیر جناب یانا مالا راما کرشنودو بھی اس موقع پر موجود ہوں گے۔ 

میک ان انڈیا پہل قدمی کے تحت سی آئی آئی، ایف آئی سی سی آئی، پی ایچ ڈی مشترکہ طور پر 15 فروری 2017 کو انڈین ایرواسپیس : سرمایہ کاروں کا اجتماع، میک ان انڈیا ایرواسپیس: کیا ایم ایس ایم ای اس کے لئے کمربستہ ہیں؟ غورخوض اور آگے کا راستہ، راؤنڈ ٹیبل۔ بھارتی چیمبر کے ذریعہ تشکیل کردہ ممالک مثلاً بھارت سوئز بزنس میٹ، بھارت برطانیہ ملاقات، بھارت پولینڈ بی 2 بی میٹگون وغیرہ کا اہتمام کریں کے جسن میں مختلف کمپنیاں شریک ہوں گی۔ 

امریکہ، فرانس، برطان یہ، روس، اسرائیل، جرمنی، بیلجئم، سوئٹزرلینڈ، یوکرین، سنگاپور، سویڈن، اسپین، جنوبی افریقہ، اٹلی، متحدہ عرب امارات، جنوبی کوریا، ہانگ کانگ، چیک جمہویہ، کناڈا، آسٹریلیا، پولینڈ اور یونان کے نمائش کار بھی اس میں حصہ لیں گے۔ 

اس شو میں حصہ لینے والی ایروبیٹک ٹیموں(فضا میں طیاروں کے ذریعہ کرتب دکھانے والی ٹیمیں) میں انڈین ایئرفورس کی سارنگ ٹیم، بھارتی فضائیہ کی سوریہ کرن ٹیم، اسکینڈی نیویا کی ایئرشو ٹیم (سویڈن سے) اور برطانیہ سے ایوولو کوس ایئرویٹک ٹیم کےنام شامل ہیں۔