بیٹی کی موت کے دوسرے روز اداکارہ ڈیبی رینلڈز بھی چل بسیں

بیٹی کی موت کے دوسرے روز اداکارہ ڈیبی رینلڈز بھی چل بسیں

ہالی وڈ کی اداکارہ ڈیبی رینلڈز کے بیٹے ٹوڈ فشر کا کہنا ہے کہ ان کی بہن کیری فشر کی موت کے دوسرے روز ہی صدمے کی وجہ سے ان کی ماں ڈیبی بھی چل بسیں۔

امریکی ذرائع ابلاغ کے مطابق 84 سالہ ڈیبی کو دل کا دورہ پڑا تھا جس کی وجہ سے بدھ کے روز انھیں لاس اینجلس کے ایک ہسپتال لے جایا گیا تھا۔

ایک روز قبل ہی ڈیبی کی بیٹی کیری فشر کا سفر میں دوران پرواز دل کا دورہ پڑا تھا جس کی وجہ سے ان کا انتقال ہوگيا۔

ڈیبی رینالڈز سنہ 1952 میں آنے والی فلم ’سنگن، ان دی رین‘ میں جین کیلی کے مد مقابل اپنے کردار سے شہرت کی بلندیوں پر پہنچی تھیں۔

ان کی بیٹی کیری فشر بھی اداکارہ تھیں جو سٹار وارز سیریز میں 'پرنسیز لیا' کے کردار کے لیے جانی جاتی ہیں۔ 60 سالہ کیری فشر کا انتقال منگل کو دوران سفر جہاز میں حرکت قلب بند ہوجانے کی وجہ سے ہو گیا تھا۔

ڈیبی کے بیٹے ٹوڈ فشر نے اپنی ماں کی موت کا اعلان کرتے ہوئے خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹیڈ پریس کو بتایا کہ ’اب وہ کیری کے ساتھ ہیں اور ہم سب صدمے میں ہیں۔‘

انھوں نے مزید کہا کہ ماں کے لیے میری بہن کی موت کا صدمہ کچھ زیادہ ہی تھا جس کی وہ تاب نہ لا سکیں۔

منگل کے روز ہی ڈیبی رینلڈز نے اپنی بیٹی کی موت سے متعلق ایک بیان پوسٹ کیا تھا جس میں انھوں نے اپنی بیٹی کی صلاحیتوں کی تعریف کرنے کے لیے لوگوں کا شکریہ ادا کیا تھا۔

 پچاس اور 60 کے عشرے میں ڈیبی ہالی وڈ کی معروف ہستیوں میں سے ایک تھیں جنھوں نے کئی موسیقی سے لبریز اور مزاحیہ فلموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے۔

’سنگن ان دی رین‘ میں بہترین کام کی وجہ سے محض 19 برس کی عمر میں ہی وہ ایک سٹار بن چکی تھیں۔

انیس سوچوسٹھ ( 1964) میں ’انسنکیبل مولی براؤن‘ کے لیے انھیں بہترین اداکارہ کے لیے اکیڈمی ایوارڈ کے لیے بھی نامزد کیا گیا تھا۔

ڈیبی نے سنہ 1955 میں گلوکار ایڈی فشر سے شادی کی تھی جن سے انھیں دو بچے کیری اور ٹوڈ پیدا ہوئے۔ بعد میں فشر سے طلاق ہونے کے بعد ڈیبی نے دو بار شادی کی تھی۔