اشرف غنی سے سرتاج عزيز نے کی ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں کی ملاقات

اشرف غنی سے سرتاج عزيز نے کی ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں کی ملاقات

 پاکستان کے وزیر اعظم نواز شریف کے خصوصی مشیر برائے خارجہ امور سرتاج عزیز نے آج صبح یہاں افغان صدر اشرف غنی سے ملاقات کی۔ مسٹرسرتاج عزیز افغانستان کی امن سلامتی اور خوشحالی کیلئے نومبر 2011 میں قائم استنبول پروسس کے تحت قائم ہارٹ آف ایشیا کے چھٹے وزارتی اجلاس میں شرکت کرنے آئے ہیں۔ پاکستان کے ایک اہلکارکے مطابق مسٹر سرتاج عزیز نے مسٹر اشرف غنی کے ساتھ افغانستان کے امن و استحکام اور خوشحالی میں پاکستان کی جانب سے تعاون کے موضوع پر بات چیت کی۔ مسٹر عزیز نے ان سے کہا کہ پاکستان کس طرح سے افغانستان میں امن و استحکام قائم کرنے اور وہاں ترقی کے لئے تعاون دینے کو تیار ہے۔

مسٹر سرتاج عزیز کل دیر شام خصوصی طیارے سے یہاں پہنچے تھے اور وزرائے خارجہ کے اعزاز میں منعقدہ عشائیہ میں شامل ہوئے۔ اس دوران مسٹر عزیز اور چار دیگر ممالک کے وزرائے خارجہ نے وزیر اعظم نریندر مودی سے بھی استقبالیہ ملاقات کی۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے مسٹر عزیز سے  مصافحہ کرتے ہوئے پوچھا کہ ان کے وزیر اعظم نواز شریف کیسے ہیں۔ اس پر مسٹر عزیز نے کہا کہ مسٹر نوازشریف بالکل ٹھیک ہیں اور ان (مسٹر مودی کو) نیک خواہشات بھیجے ہیں۔