ہوٹلوں کے ذریعے سروس چارج وصول کرنے پر ریاستی سرکاروں کو ایڈوائزری جاری 

ہوٹلوں کے ذریعے سروس چارج وصول کرنے پر ریاستی سرکاروں کو ایڈوائزری جاری 

نئی دہلی، 7فروری،صارفین کے امور ، خوراک اور سرکاری نظام تقسیم کے وزیر مملکت جناب سی آر چودھری نے آج لوک سبھا میں ایک سوال کے تحریری جواب میں بتایا کہ حکومت کو صارفین کی قومی ہیلپ لائن کے ذریعے صارفین سے بہت سی شکایتیں موصول ہوئی ہیں کہ کچھ ہوٹل اور ریسٹورینٹ ٹپس کی جگہ کھانے پینے کی چیزوں کے بلوں پر 5 سے 20 فیصد کی شرح سے سروس چارج وصول کررہے ہیں۔ جو ایک صارف کو مجبوراً ادا کرنا پڑتا ہے چاہے اس کے لئے اسے کسی بھی قسم کی سروس فراہم ی گئی ہو۔ 

صارفین کے امور کے محکمے نے اس معاملے کا جائزہ لیا ہے اور صارفین کے تحفظ کے قانون 1986 کی شقوں سے متعلق ریاستوں میں کمپنیوں، ہوٹلوں اور ریسٹورینٹس کو خبردار کرنے کے لئے ریاستی سرکاروں کو ایڈائزری جاری کی ہے اور ہوٹل / ریسٹورینٹس کو مشورہ دیا ہے کہ وہ ہوٹل / ریسٹورینٹس میں مناسب جگہ پر نمائش کے ذریعے یہ معلومات پھیلائیں کہ سروس چارجز رضاکارانہ ہے۔